Home دلچسپ و عجیب کھیل پاکستان میں انٹرنیشنل ہاکی بحال کرنے کا عزم

پاکستان میں انٹرنیشنل ہاکی بحال کرنے کا عزم

ایف ایچ انکوائری کمیشن کا اجلاس لوزین میں ہوگا۔ فوٹو : اے ایف پی/فائل

ایف ایچ انکوائری کمیشن کا اجلاس لوزین میں ہوگا۔ فوٹو : اے ایف پی/فائل

 لاہور:  ایشین ہاکی فیڈریشن کے چیف ایگزیکٹیوآفیسر طیب اکرام نے واضح کیا ہے کہ پروہاکی لیگ میں عدم شرکت پرپاکستان کو ابھی کوئی جرمانہ نہیں ہوا، ایف آئی ایچ ڈسپلنری کمیٹی رواں ماہ اس کیس کا فیصلہ کرسکتی ہے جب کہ پاکستان ہاکی فیڈریشن کی درخواست پر یہ معاملہ التوا کا شکار ہوا۔

لاہور میں پاکستان ہاکی فیڈریشن کے سیکریٹری جنرل اولمپئن آصف باجوہ سے ملاقات کے بعد ایشین باڈی کے چیف ایگزیکٹیو طیب اکرام نے میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے کہا کہ پاکستان ہاکی ٹیم کو پرولیگ سے دستبردار نہیں ہونا چاہیے تھا۔پاکستان ہاکی ٹیم کی اولمپکس میں شرکت ڈسپلنری کمیشن کے فیصلے سے مشروط ہوگی، پاکستان ہاکی کا انٹرنیشنل ہاکی میں بہت اہم مقام ہے۔اے ایچ ایف اور ایف آئی ایچ ہمیشہ پاکستان ہاکی کو اہمیت دیتے ہیں۔

اے ایچ ایف اور ایف آئی ایچ کے لیے پاکستان ہاکی کے ساتھ مل کر کام کرنا اعزاز ہے۔ایشین ہاکی فیڈریشن اور پی ایچ ایف مل کر ہائی پرفارمنس ہاکی اکیڈمی بنائیں گے، پاکستان ہاکی کی اہمیت کا اندازہ یوں لگایا جاسکتا کہ پاکستان ہاکی کو پانچ مرتبہ وائلڈ کارڈ ملا ہے، ہماری کوشش ہوگی کہ پاکستان میں جلد بین الاقوامی ہاکی بحال ہو، پاک بھارت ہاکی سیریز ایشیا میں ہاکی بحالی کے لیے اہم ہے۔

سیکریٹری پی ایچ ایف آصف باجوہ نے کہا کہ پاکستان ہاکی فیڈریشن کافی عرصے سے انٹر نیشنل ہاکی کی بحالی کے لیے کوشاں ہیں۔ طیب اکرام پاکستان میں بین الاقوامی ہاکی بحالی کے لیے اپنا اثرورسوخ استعمال کریں گے۔